عمر ہر چند کہ ہے برق خرام
دل کے خوں کرنے کی فرصت ہی سہی

12345»